بلاول اور شہباز شریف مولانا کیساتھ مخلص نہیں، جاوید پراچہ

کوہاٹ:

سابق رکن قومی اسمبلی اور انٹرنیشنل ورلڈ پریزنرز کمیشن کے چیئرمین حاجی جاوید ابراہیم پراچہ نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے میں بعض سیاسی پارٹیاں ان کے ساتھ مخلص نہیں اور صرف اپنے مقاصد کے حصول تک ان کیساتھ رہیں گی۔

یہ بات انہوں نے بے باک آواز کیساتھ خصوصی بات چیت کے دوران کہی

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان آگے اور آگے جانے کی بات کر رہے ہیں جس کا مطلب یہی لیا جا سکتا ہے کہ وہ کچھ لئے بغیر یہاں سے نہیں جائیں گے اب یہ مولانا اور ان کا اللہ جانتا ہے کہ وہ کیا لینے یہاں آئے ہیں لیکن یہ بات طے ہے کہ اپوزیشن کی دو بڑی جماعتیں ان کے ساتھ آخری حد تک جانے کے لئے تیار نہیں اور اس کی وجہ ان دونوں جماعتوں کے اندرونی اختلافات ہیں۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ اس معرکے میں بلاول بھٹو زرداری اور میاں شہباز شریف اپنے مفادات کا سودا کرلیں گے اور کسی بھی وقت مولانا کو چھوڑ جائیں گے جبکہ میاں نواز شریف اور آصف علی زرداری کسی حد تک مولانا کیساتھ سفر کرنا چاہتے ہیں۔

یاد رہے کہ جب بے باک آواز کیساتھ جاوید ابراہیم پراچہ کی یہ بات چیت جاری تھی عین اسی وقت میڈیا نے یہ خبر جاری کر دی تھی کہ بلاول بھٹو نے دھرنے میں مولانا کا ساتھ دینے سے معذرت کر لی ہے اور کہا ہے کہ ان کی پارٹی نے صرف مولانا کے مارچ میں شرکت کا فیصلہ کیا تھا۔

تاہم جاوید ابراہیم پراچہ کا کہنا ہے کہ اگر مولانا کیساتھ اپنے کارکن اور پشتون قوم پرست جماعتوں کے کارکن مارچ میں نہ نکلتے تو شاید بلاول اور شہباز شریف مولانا کے کنٹینر پر بھی نہ آتے۔

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.