قبائلی اضلاع سے پہلی خاتون رکن صوبائی اسمبلی، باپ نے تاریخ رقم کر دی

ضلع خیبر

بلوچستان عوام پارٹی نے ضلع خیبر سے خاتون کو مخصوص نشست پر نامزد کرتے ہوئے قبائلی اضلاع میں نئی تاریخ رقم کر دی قبائلی اضلاع سے نو منتخب آذاد امیدواروں کی بلوچستان عوامی پارٹی باپ میں شمولیت کے بعد بصیرت خان شنواری کو خواتین کی مخصوص نشست پر رکن صوبائی اسمبلی نامزد کر دیا جو کہ قبائلی اضلاع کی تاریخ میں صوبائی اسمبلی میں پہلی خاتون رکن ہوں گی۔

بصیرت خان شنواری کی نامزدگی کا اعلان الحاج کاروان کے نومنتخب ارکان صوبائی اسمبلی کی بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت کے ٹھیک ایک روز بعد کیا گیا، الحاج کاروان کے امیدواروں نے بلوچستان کے وزیراعلیٰ ہاؤس میں بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا تھا۔

قبائلی اضلاع کی خبروں سے حوالے سے معروف نیوز ایجنسی فاٹا وائس کے مطابق نامزد ہونے والی بصیرت خان شنواری تین بھائیوں اور تین بہنوں میں سب سے چھوٹی ہیں جوکہ آج کل پشاور میں مقیم ہیں اور ان کے شوہر رحمت اللہ پشاور کے ایک نجی کالج میں بچوں کو پڑھاتے ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں

کوہاٹ: خواتین کی ڈیجیٹل بااختیاری کے حوالے سے سیمینار

بصیرت شنواری یکم جنوری انیس سو اٹھاسی میں ایک متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والے نوشاد علی شنواری کے گھر میں پیدا ہوئیں۔ جوکہ لنڈی کوتل منتقل ہوئے اور پشاور میں رہائش اختیار کی۔

بصیرت خان شنواری نے مقامی علاقے دانش آباد سے تعلیم حاصل کی اور پھر پشاور یونیورسٹی سے پہلے ڈویژن میں سیاسیات اور انٹرنیشنل ریلیشن کی ڈگریاں حاصل کیں۔

مذکورہ ویب نیوز ایجنسی نے اپنے ذرائع کے حوالے سے مزید بتایا ہے کہ صوبائی اسمبلی کے حلقہ ایک سو پانچ سے خواتین کی مخصوص نشست کے لئے کل دس خواتین نے درخواستیں دی تھیں تاہم دس رکنی کمیٹی نے بصیرت خان شنواری کے حق میں فیصلہ دیا کمیٹی میں الحاج شاہ جی گل آفریدی اور سنیٹر تاج محمد آفریدی بھی شامل تھے۔ ذرائع کے مطابق بصیرت خان شنواری کو ان کی قابلیت اعلیٰ تعلیم یافتہ ہونے کی وجہ سے عین میرٹ کے مطابق چنا گیا ہے۔

یاد رہے کہ بصیرت شنواری اس وقت جی آئی زیڈ نامی جرمنی کی ایک غیر سرکاری تنظیم میں ملازمت کر رہی ہیں اور اپنی قابلیت کے باعث کئی بار ان کے کام کو سراہا گیا ہے۔

بصیرت شنواری کے والد کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنی بیٹی کی تعلیم اور تربیت کے لئے جو مشقتیں جھیلیں آج ان کا بدلہ انہیں مل گیا ہے اور وہ اپنی بیٹی کی نامزدگی پر فخر کرتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کی بیٹی دوسری قبائلی اضلاع سے تعلق رکھنے والی خواتین کے لئے حوصلے کا سبب بنیں گی۔

یاد رہے کہ الحاج کاروان کی بنیاد سابق رکن قومی اسمبلی الحاج شاہ جی گل آفریدی نے رکھی جو کہ عمران خان کے سخت مخالف سمجھے جاتے تھے تاہم اب انہوں نے بلوچستان میں پاکستان تحریک انصاف کی اتحادی پارٹی بلوچستان عوامی پارٹی باپ میں شمولیت اختیار کر لی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.